darod pak se jaoo ka tor by PalmistNashaad1

VIEWS: 294 PAGES: 1

									                      ‫درود شریف سے جادو کا خاتمہ‬
‫یہ هیرازًذگی کب روزاًہ کب هعوول اور تجرثہ ہے کہ هیرے پبش کوئی ثھی جبدو گرفتہ آئے تو هیں اش‬
‫کو درود اثراہیوی گیبرہ هرتجہ پڑھ کر دم کرتب ہوں تو هریض پر غٌودگی غبلت آتی ہیبور دش هٌٹ کے‬
‫ثعذ فورً وہ اپٌی روح هیں تبزگی هحطوش کرتب ہے جص ضے اضے ضکوى هلتب ہے اور وہ هجھے اش‬            ‫ا‬
‫ثبت کے هتعلك خود ثتبتب ہے کہ دوثبرہ هجھے کجھی جبدو کی اریت ًہیں ہوئی یہ هیرا روزاًہ کب هعوول‬
‫ہے اور هیں ایطے هریضوں کی تشخیص اور اى کے کبهل عالج کیلئے ضت ضے پہلے درود پبک کے‬
‫رریعے عالج کرتب ہوں اور اہلل کے حکن ضے اًہیں شفب ء ضرور ثرضرور هلتی ہے اش تجرثے ضے‬
‫یہی ثبثت ہوا کہ جبدو درود شریف کے ضبهٌے ثبلکل ہیچ ہے کیوًکہ جو افراد درود پبک کو ورد‬
‫کرتے ہیں یب اضے پڑھتے ہیں تو وہ فورً فرکبر هذیٌہ حضرت هحوذ هصطفی ﷺ کی رات پبک تک‬
                                                              ‫ا‬
‫فورً پہٌچب دیب جبتب ہے کہ فالں شخص ًے آپ ﷺپر فالں درود ثھیجب ہے درود پبک ایک راثطے‬              ‫ا‬
‫واال عول ہے جو راثطہ ضرکبر هذیٌہ ﷺ کے ضبتھ ہوتب ہے اة جص طرح شیطبى ہر اًطبى کب روپ‬
‫دھبر ضکتب ہے اور اضے ضرکبر هذیٌہ ﷺ کب روپ دھبرًے کی طبلت هیطر ًہیں اضی طرح دوضری‬
‫کئی کالهوں ضے زیبدہ ثڑھ کر درود پبک هیں ایطی روحبًیت چھپی ہوئی ہے جو آج کے اًطبى کے‬
‫رہي ضے ثبال تر ہے اش لئے اگر کوئی فرد جبدو ٹوًے یب کطی ثھی اریت ضے هحفوظ رہٌب چبہے تو‬
‫هیری طرف ضے ہر کطی کو اش کی اجبزت ہے کہ وہ روزاًہ ثعذ ًوبز عشبء درود اثراہیوی کو پبًچ‬
‫ضو هرتجہ پڑھے اور دم کیب ہوا پبًی پئے اضے کجھی جبدو کب اثر ًہیں ہو گب ۔ اگر کوئی هریض ہو یب‬
 ‫کطی ثھی روحبًی یب جطوبًی ثیوبری هیں هجتال ہو تو اش کے خبتوے کیلئے درود پبک کو گالة کے‬
                                          ‫عرق پر دم کرکے پالیب جبئے اہلل رة العست ضرورشفبء دیگب۔‬
      ‫اللھن صلی علی هحوذ و علیٰ آل هحوذ کوبصلیت علی اثراہین و علیٰ آل اثراہین اًک حویذ هجیذ اللہن‬
               ‫ثبرک علیٰ هحوذ و علیٰ آل هحوذ کوب ثبرکت علیٰ اثراہین و علیٰ آل اثراہین اًک حویذ هجیذ۔‬


‫عبهل آضٹرو پبهطٹ‬
‫غالم مصطفےٰ ناشاد‬
‫‪Web site: palmistory.20m.com‬‬
‫‪Email: palmistnashaad@yahoo.com‬‬

								
To top